70

ڈنمارک کا ’ٹی وولی گارڈنز‘اپنی 175ویں سالگرہ منا رہا ہے

کوپن ہیگن: ڈنمارک کے دارالحکومت کوپن ہیگن میں واقع دنیا کے قدیم ترین امیوزمنٹ پارکس میں سے ایک ’ٹی وولی گارڈنز‘ کو اس کی 175 ویں سالگرہ کے موقع پر دو لاکھ برقی قمقموں سے سجا دیا گیا۔
تفصیلات کے مطابق کوپن ہیگن میں سنہ 1843 سے قائم’ٹی وولی گارڈن‘ میں قائم دنیا کاقدیم ترین امیوزمنٹ پارک جو چالیس کلو میٹر رقبہ پر پھیلا ہوا ہے‘ اپنی 175 ویں سالگرہ منار ہا ہے ‘ اس موقع پر پارک میں لگے پر درخت پر برقی قمقمے روشن کیے گئے ہیں جو کہ ڈنمارک کی ثقافت کی نمائندگی کرتے ہیں۔

پارک انتطامیہ کا کہنا ہے کہ اس موقع پر یہاں کی عمارتوں اور جھولوں کو منور کرنے کے لیے کل دو لاکھ ایل ای ڈی بلب لگائے گئے ہیں جن کے سبب رات کے سمے شہر میں دور دورسے یہ جگہ بقعہ نور بنی نظر آتی ہے۔

یہ پارک سنہ 1843 میں ڈنمار کے بادشاہ کے حکم پر جارج کارسٹنسن نامی شخص نے قائم کیا تھا جو کہ امیوزمنٹ کے معاملات میں انتہائی جدید خیا لات اور مہارتوں کا حامل تھا ۔ بدقسمتی سے جارج محض پانچ سال اس پارک کا ڈائریکٹر رہ سکا ‘ اس کے بعد اسے جنگِ پرشیا کے دوران اسے معاہدے کی خلاف ورزی کے الزام میں نکال دیا گیا۔

پانچ سال بعد جارج واپس آیا اور ٹی وولی کے مقابلے پر ایک اور امیوزمنٹ پارک ’’الحمرا‘ کی تعمیر شروع کی تاہم وہ اس کے افتتاح سے قبل ہی نمونیا کا شکار ہوگیا اور 1857 میں 54 سال کی عمر میں انتقال کرگیا۔
دلچسپ بات یہ ہے کہ پارک کا باضابطہ افتتاح 15 اگست 1843 میں ہوا تھا یعنی ابھی اسے اپنے 175 سال پورے کرنے میں لگ بھگ چھ مہینے باقی ہیں تاہم اس کی تقریبات سال کے آغاز سے ہی شروع کردی گئیں ہیں۔

اس خبرکوبھی پڑھیں:  والدین کا پسندیدہ بچہ کون سا ہے؟

اس وسیع و عریض پارک میں تفریح کے لیے آنے والوں کی رہائش کے لیے انتہائی شاندار ہوٹل‘ ڈائن ان اور دیگر بے شمار سہولیات کا انتظام ہے ۔ جبکہ موسمِ سرما کی مناسبت سے یہا ں آئس سرفنگ‘ اسکیٹنگ اور دیگر ونٹر گیمز بھی کھیلے جاسکتے ہیں۔

خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات  کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں
20Comments comments

یہ بھی پڑھیں

اے آر وائی نیوز انگلش