52

پوپ فرانسس کا اعتراف، عبادت کے دوران سو جاتا ہوں

مسیحوں کے روحانی پیشوا پوپ فرانسس نے اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ عبادت کرتے ہوئے کبھی کبھی ان پر غنودگی طاری ہو جاتی ہے۔کیتھولک فرقے کے ایک مذہبی ٹی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے انھوں نے کہا کہ ‘عبادت کرتے ہوئے کبھی کبھی وہ سو جاتے ہیں۔’مزید پڑھیےجسٹن ٹروڈو کا پوپ فرانسس سے معافی کا مطالبہ’بموں کی ماں‘ پر پوپ فرانسس کا اعتراضاسی سالہ مذہبی پیشوا نے سینٹ تھریسا کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ وہ بھی عبادت کے دوران سو جایا کرتی تھیں۔ان کا کہنا تھا کہ عبادت کے دوران سو جانا اصل میں خدا کو محبوب ہے کیونکہ مسیحوں کو کہا جاتا ہے کہ عبادت کے دوران انھیں ایسا محسوس ہونا چاہیے جیسے وہ اپنے والد کی باہوں میں آرام کر رہے ہوں۔اطلاعات کے مطابق اسی سالہ پوپ فرانسس ہر روز رات کو نو بجے سونے چلے جاتے ہیں اور سورج طلوع ہونے سے قبل چار بجے بیدار ہوتے ہیں۔پوپ فرانسس جن کا تعلق ارجنٹینا سے ہے وہ سنہ دو ہزار تیرہ سے رومن کیتھولک چرچ کے سربراہ ہیں اور عوامی تقریبات اور بین الاقوامی دوروں کی وجہ سے وہ بہت مصروف رہتے ہیں۔وہ اپنی معتدل اصلاحات اور مذہبی معاملات میں کھلے پن کی وجہ سے مقبول ہیں اور خاص طور پر ان کا سادہ لب و لہجہ بھی ان کی شہرت کا باعث ہے۔