78

پرتھوی شا: پانچ میچوں میں چار سنچریاں

انڈیا کے 17 سالہ بیٹسمین پرتھوی شا نے رجنی ٹرافی میں ممبئی کی جانب سے کھیلتے ہوئے اڑیسہ کے خلاف سنچری بنائی ہے جو ان کے پانچویں فرسٹ کلاس میچ میں چوتھی سنچری ہے۔پرتھوی شا نے اڑیسہ کے خلاف 153 گیندوں پر 105 رنز بنائے۔صرف سچن تندولکر ہی ایسے کھلاڑی ہیں جن کا پرتھوی شا کے ساتھ اکثر موازنہ کیا جا رہا ہے جنھوں نے اپنی 18 ویں سالگرہ سے پہلے پرتھوی شا سے زیادہ سنچریاں بنائیں۔ پرتھوی شا جو اگلے ہفتے 18 برس کے ہو جائیں گے ان کے پاس تندولکر کا 17 برس کی عمر میں سات سنچریوں کا ریکارڈ توڑنے کا موقع نہیں ہو گا۔یہ بھی پڑھیےتیز ترین 9000 رنز کا ریکارڈ بھی وراٹ کوہلی کے نامانڈیا نے پہلے ایک روزہ کرکٹ میچ میں آسٹریلیا کو با آسانی شکست دے دیمتنازع پچ پر کھیلا گیا میچ انڈیا نے جیت لیااس کے باوجود کہ انھوں نے پانچ فرسٹ کلاس میچوں میں چار سنچریاں بنائی ہیں۔ یہ اس بات کا ثبوت ہے کہ انڈین کرکٹ بورڈ نے پرتھوی شاہ سے بہت زیادہ امیدیں لگا لی ہیں۔ واضح رہے کہ پرتھوی شاہ نے 11 برس کی عمر میں کرکٹ کھیلنا شروع کی۔انگلش کرکٹ کاؤنٹی ہمشائر کے سابق آل راؤنڈر جولین وڈ نے سنہ 2013 میں پرتھوی شا کے بارے میں کہا تھا کہ اس بات میں کوئی شک نہیں کہ وہ پانچ برس میں دنیا کے بہترین بیٹسمین بن جائیں گے۔واضح رہے کہ پرتھوی شا نے جولین وڈ کی ٹیم کے خلاف 73 رنز بنائے تھے۔پرتھوی شا انڈیا کی ریاست مہاراشٹر میں پیدا ہوئے۔ ان کے والد نے اپنے بیٹے کو وائرر کرکٹ اکیڈمی میں اس وقت داخل کروایا جب وہ صرف تین سال کے تھے۔ تاہم انھوں نے کرکٹ کی زیادہ تر تعلیم انگلینڈ میں حاصل کی۔

اس خبرکوبھی پڑھیں:  ’ہیپی برتھ ڈے میسی‘

پرتھوی شا اپریل سنہ 2012 میں پہلی بار انگلینڈ آئے اور دو ماہ تک چیلڈ ہلمی سکول کی جانب سے کھیلے۔ انھوں نے اپنے پہلے ہی میچ میں سنچری بنائی۔ انھوں نے اس عرصے میں 84 رنز کی اوسط سے 1,446 رنز بنائے۔اگرچہ ان کے ٹیلنٹ کو انڈیا میں موجود کرکٹ ماہرین پہلے ہی جان چکے تھے تاہم ٹائمز آف انڈیا نے انگلینڈ کے نارتھ ویسٹ سکول میں ان کی کامیابی کے بارے میں بتایا۔پرتھوی شا سنہ 2013 میں انگلینڈ واپس آئے اور مختلف ٹیموں اور لیولز کی جانب سے کھیلے۔ انھوں نے آکسفورڈ شائر کی جانب سے کھیلتے ہوئے 68 رنز بنائے۔پرتھوی شا کا انڈیا کے معروف بیٹسمین سچن تندولکر کے ساتھ موازنہ کیا جاتا ہے۔ سچن کو ‘لٹل ماسٹر’ کے طور پر جانا جاتا ہے جبکہ پرتھوی شا کو ‘دی ماسٹر اپرینٹس’ کہہ کر پکارا جا رہا ہے۔ یہ بات خاص طور پر قابلِ ذکر ہے کہ سچن تندولکر کی کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کے صرف چار دن بعد پرتھوی شا نے رضوی سپرنگ فیلڈ کی جانب سے کھیلتے ہوئے 330 گیندوں پر 546 رنز بنائے جو کسی بھی انڈین بیٹسمین کی جانب سے بنایا جانے والا نیا ریکارڈ ہے۔پرتھوی شا انڈیا واپس آنے کے بعد انڈر 19 ٹیم کی جانب سے کھیلنا شروع ہوئے اور اسی برس انھوں نے انگلینڈ کا دورہ کیا۔ انھوں نے انگلینڈ کے خلاف فرسٹ یوتھ ٹیسٹ کی دونوں اننگز میں 86 اور 69 رنز بنائے۔وہ گذشتہ ماہ انڈین بورڈ پریذڈینٹ الیون کی ٹیم میں منتخب ہوئے۔ انھوں نے نیوزی لینڈ کے خلاف کھیلے جانے والے ایک روزہ وارم اپ میچ میں 66 رنز بنائے۔پرتھوی شا کی اس عمدہ کارکردگی کی تعریف کرتے ہوئے نیوزی لینڈ کے بولر ٹرینٹ بولٹ کا کہنا تھا کہ ‘میں اس بات پر یقین نہیں کر سکتا کہ پرتھوی شا صرف 17 برس کے ہیں۔’ان کا مزید کہنا تھا ‘پرتھوی شا بہت عمدہ کھیلے۔ غالباً وہ بہت سے لوگوں میں سے ایک ہیں جن کا کریئر بہت روشن ہے۔’