36

نوجوان تیزی سے فیس بک کا استعمال ترک کر رہے ہیں، تحقیق

سان فرانسسكو: نوجوانوں میں فیس بک ترک کرنے کے رجحان میں 2015ء سے تیزی سے کمی واقع ہورہی ہے جب کہ انسٹا گرام اور اسنیپ چیٹ کے استعمال میں اضافہ دیکھا گیا ہے۔ 
بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکا میں کی گئی تحقیق میں انکشاف ہوا ہے کہ 2015ء کے مقابلے میں فیس بک کی مقبولیت میں کمی واقع ہوئی ہے اور نوجوانوں میں فیس بک کو ترک کر کے سماجی رابطے کی دیگر ویب سائٹس کو استعمال کرنے کا رجحان دیکھا گیا ہے۔ نوجوانوں کی اولین پسند فیس بک کے بجائے اب یوٹیوب، انسٹاگرام اور اسنیپ چیٹ ہیں۔
امریکا کے نجی تحقیقاتی ادارے پیو ریسرچ سینٹر (Pew Research Center) کی جانب سے کیے گئے اس سال کے سروے میں حیران کن اعداد و شمار سامنے آئے ہیں۔ 2015ء میں اسی ادارے کی جانب سے کیے گئے سروے کے تقابلی جائزے سے پتا چلا کہ نوجوانوں میں فیس بک کا استعمال 71 فیصد سے گھٹ کر 51 فیصد رہ گیا ہے جب کہ نوجوانوں میں انسٹا گرام کی مقبولیت 52 فیصد سے بڑھ کر 72 فیصد اور اسنیپ چیٹ کی 41 فیصد سے بڑھ کر 69 فیصد ہوگئی ہے۔

نوجوانوں میں فیس بک ترک کرنے کے رجحان کی تصدیق اس سے قبل فروری میں کی جانے والی ایک تحقیق سے بھی ہوئی تھی جس کے اعداد و شمار کے مطابق 12 سے 17 سال کی عمر کے نوجوانوں میں فیس بک کے استعمال میں 10 فیصد کمی دیکھی گئی تھی۔ موجودہ صورت حال کو دیکھتے ہوئے ریسرچ کمپنی کا دعویٰ ہے کہ آئندہ برس تک فیس بک کو 2.1 ملین صارفین سے محروم ہونے کا امکان ہے۔
واضح رہے کہ 2016ء میں ہونے والے امریکا کے صدارتی انتخاب کے دوران فیس بک صارفین کا ڈیٹا استعمال ہونے پر سماجی رابطے کی اس کامیاب ویب سائٹ کو مشکلات کا سامنا رہا ہے جب کہ یوٹیوب انسٹا گرام اور اسنیپ چیٹ کی مقبولیت میں اضافہ ہو رہا ہے۔
The post نوجوان تیزی سے فیس بک کا استعمال ترک کر رہے ہیں، تحقیق appeared first on ایکسپریس اردو.