57

فلم میں رکشے والے کا نمبر استعمال، اداکار پر مقدمہ

بنگلہ دیش میں ایک رکشہ ڈرائیور نے ملک کے جانے مانے اداکار کے خلاف مقدمہ کیا ہے کیونکہ اس اداکار نے اپنی فلم میں اس رکشہ ڈرائیور کا موبائل نمبر استعمال کیا۔اس وجہ سے ہوا کچھ یوں کہ اداکار شکیب خان کی خواتین مداحوں نے ان کو سراہنے کے لیے اجاج ال میاں یعنی رکشہ ڈرائیور کو فون کالز کرنا شروع کر دیں۔اجاج ال میاں کا کہنا ہے کہ ’میرا نمبر استعمال ہونے سے میری زندگی اجیرن ہو گئی ہے۔‘انھوں نے خود کو ہونے والی پریشانی کے عوض 60 ہزار ڈالر کا مطالبہ کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ اس سارے معاملے کی وجہ سے ان کی ازدواجی زندگی تباہ ہونے والی تھی۔ان کے اندازے کے مطابق انھیں جولائی میں پانچ دنوں کے دوران 500 کے قریب فون کالز آئی ہوں گی جن میں خواتین شکیب خان سے ملنے کا کہتی تھیں۔تاہم تاحال اداکار شکیب خان کی جانب سے اس دعویٰ پر کسی قسم کا کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا ہے۔خیال رہے کہ شکیب خان کا شمار بنگلہ دیش کے کامیاب اور معروف اداکاروں میں ہوتا ہے۔ وہ کئی ایوارڈز بھی جیت چکے ہیں۔

یہ سارا معاملہ جون میں ریلیز ہونے والی فلم ’راجنیتی‘ سے شروع ہوا۔ شکیب خان کی پروڈکشن اور ہدایت کاری میں بننے والی اس فلم میں رکشہ ڈرائیور اجاج ال میاں کا موبائل فون نمبر استعمال کیا گیا تھا۔فلم میں دکھایا گیا ہے کہ اداکار اپنی گرل فرینڈ کو موبائل فون نمبر پڑھ کر بتا رہے تھے۔خبر رساں ادارے اے ایف پی سے بات کرتے ہوئے اجاج ال میاں نے بتایا کہ ’ہر روز مجھے سینکڑوں کالز آتیں، جن میں زیادہ تر شکیب کی خواتین مداحوں کی ہوتیں۔‘انھوں نے بتایا کہ وہ خواتین مداح فون پر کہتیں: ’ہیلو شکیب، میں آپ کی مداح ہوں۔ کیا آپ کے پاس مجھ سے بات کرنے کے لیے دو منٹ ہیں۔‘اجاج ال میاں نے ڈسٹرکٹ کورٹ میں شکیب خان کے خلاف مقدمہ رواں ہفتے کیا تھا تاہم شروع میں جج ان کا کیس سننے کو تیار نہیں تھے۔تاہم بعد میں اطلاعات کے مطابق جب وکلا نے ثبوت وغیرہ پیش کرنا شروع کیے تو جج کو اپنا ارادہ تبدیل کرنا پڑا۔مقامی میڈیا کے مطابق اس مقدمے کی اگلی سماعت کے لیے 18 دسمبر کی تاریخ دی گئی ہے۔