41

عراقی فضائیہ کی شامی صوبے دیرالزور میں داعش کے ٹھکانوں پر بمباری، 45 جنگجو جاں بحق

بغداد / واشنگٹن: عراقی فوج نے شامی علاقے میں بمباری کر کے داعش کے 45 جنگجوؤں کو جاں بحق کر دیا، مرنے والوں میں داعش کے سینئر کمانڈر بھی شامل ہیں۔
خبر ایجنسی کے مطابق عراقی فضائیہ کے ایف 16جنگی طیاروں نے شام کے مشرقی صوبے دیر الزور میں داعش کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا، عراقی فضائیہ نے داعش جنگجوؤں کے 3 ٹھکانوں کو تباہ کیا، ذرائع کے مطابق شامی علاقے حاجن میں داعش کمانڈروں کی میٹنگ جاری تھی جسے نشانہ بنایا گیا۔
امریکا نے روس کو تنبیہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ شام میں کشیدگی میں کمی کے لیے اسد فوج کو پابند کرے ورنہ کشیدگی کا ذمے دار ماسکو ہو گا، معاہدے سے روگردانی کے خطرناک نتائج ہوں گے۔
اقوام متحدہ میں امریکی خاتون سفیر نکی ہیلی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اسد رجیم کی جانب سے جنوب مغربی شام میں کشیدگی نہ بڑھانے کے معاہدے کی سختی سے پابندی کرنا ہوگی، ان کا کہنا تھا توقع ہے کہ روس کشیدگی کم کرنے میں اپنا کردار ادا کرے گا، انھوں نے روس پر زور دیا کہ وہ اپنے اتحادی اسد رجیم کو جنوب مغربی شام میں محاذ آرائی کی صورت حال پیدا کرنے سے روکے ورنہ اس کے خطرناک نتائج سامنے آ سکتے ہیں۔
امریکی سفیر نے خبردار کیا کہ شام میں کوئی نئی کشیدگی پیدا ہوتی ہے تو آخر کار اس کا ذمے دار روس ہوگا۔
 
The post عراقی فضائیہ کی شامی صوبے دیرالزور میں داعش کے ٹھکانوں پر بمباری، 45 جنگجو جاں بحق appeared first on ایکسپریس اردو.