42

سعودی عرب میں خواتین کو مٹھائی کی دکان پر کام کرنے کی مشروط اجازت

ریاض : سعودی عرب میں خواتین کو مٹھائی کی دکان پر کام کرنے کی مشروط اجازت دے دی گئی ہے جس کے لیے مالکان کو خواتین کو خصوصی سہولیات فراہم کرنا ہوگی.
اس با ت کا اعلان وزارت محنت و سماجی بہبود کے ترجمان خالد ابا الخیل کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کیا گیا جس میں‌ کہا گیا ہے کہ اگر مٹھائی کی دکان کے مالکان خواتین کے لیے نماز کی علیحدہ جگہ، رفع حاجت کے لیے خصوصی واش روم اور آرام کے لیے جگہ مختص کرتے ہیں تو وہ اپنی دکان میں خواتین کو ملازمتیں دے سکتے ہیں.
وزارت محنت و سماجی بہبود کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق کہ اگر بیکری مالکان مقررہ شرائط و ضوابط کی پابندی کرے تو ایسی صورت حال میں سعودی خواتین کو ملازمت دی جاتی ہے جس پر وزارت کو کوئی اعتراض نہیں ہوگا.

 اسی سے متعلق : پُرتعیش سہولیات سے آراستہ ڈیجیٹل پٹرول اسٹیشن، پہلی بارسعودی خاتون انچارج مقرر

اس موقع پر ترجمان وزارت محنت و سماجی بہبود خالد اباخیل نے وضاحت کی کہ خواتین ملازمین کو رات کے آخری پہر میں ڈیوٹی نہیں دی جاسکتی اور کسی دکان میں اس شرط کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پایا گیا تو دکان کو سر بہ مہر کردیا جائے گا.
خیال رہے کہ سعودی عرب ولی عہد شاہ محمد بن سلمان کے وژن 2030 کے تحت ملک کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کے لیے انقلابی اقدامات کیے جا رہے ہیں اور خواتین کو روایت سے ہٹ کر خصوصی اختیارات اور آزادی دی جارہی ہے۔

اس خبرکوبھی پڑھیں:  امریکہ میں بھی خواتین کو امتیازی سلوک کا سامنا ہے، نائلہ خان

خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔
20Comments comments

یہ بھی پڑھیں

اے آر وائی نیوز انگلش