22

سعودی عرب، ترکی اور اسرائیل نے شام پر حملے کی حمایت کردی

ترکی، سعودی عرب، بحرین اور اسرائیل نے شام پر امریکا اور اس کے اتحادیوں کے حملے کی حمایت کردی۔
عالمی میڈیا کے مطابق مبینہ کیمیائی حملوں کے جواب میں امریکا، فرانس اور برطانیہ کی جانب سے شام پر حملوں کی سعودی عرب، بحرین، اسرائیل اور ترکی نے حمایت کرتے ہوئے اس اقدام کو ناگزیر اور درست قرار دیا ہے۔
ترکی

عالمی خبر رساں ادارے رائٹر کے مطابق ترکی کے صدر رجب طیب اردگان نے امریکا و اتحادی ممالک کے شام پر حملے کا خیر مقدم کیا ہے اور انقرہ میں پارٹی کے اجلاس کے دوران کہا ہے کہ امریکا، برطانیہ اور فرانس کی مشترکہ کارروائی سے شامی صدر بشار الاسد کو پیغام ملے گا کہ وہ شام میں ہونے والے قتل عام کی جواب دہی سے بری الذمہ نہیں ہے۔
ترکی کی وزارت خارجہ نے بھی ایک بیان میں کہا ہے کہ وہ صدر بشار الاسد کے خلاف حملے کا خیر مقدم کرتا ہے اور اسے مناسب کارروائی قرار دیتا ہے، گذشتہ ہفتے دوما میں ہونے والا مشتبہ کیمیائی حملہ انسانیت کے خلاف جرم تھا اور اسے بغیر سزا کے نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔
اسرائیل

حملوں کی حمایت کرتے ہوئے اسرائیل نے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ گذشتہ سال امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا تھا کہ کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال سرخ لکیر عبور کرنے کے مترادف ہے آج امریکی قیادت میں فرانس اور برطانیہ نے اس بات پر عمل کیا ہے، شام مسلسل قاتلانہ اقدامات میں ملوث ہے اور حملوں کے لیے دوسروں کو جگہ فراہم کر رہا ہے۔
سعودی عرب

اس خبرکوبھی پڑھیں:  ہائر ایجوکیشن کمیشن نے اسموگ کے تدارک کیلیے سائنسی تحقیقی منصوبے پر کام شروع کر دیا

سعودی عرب نے بھی امریکا اور اتحادیوں کی جانب سے شام پر حملوں کا خیرمقدم کیا ہے، سعودی وزارت خارجہ نے ہفتے کو جاری بیان میں کہا ہے کہ ہم شامی فوجی کی کارروائیوں کے خلاف فوجی آپریشن کی مکمل حمایت کرتے ہیں کیوں کہ شامی حکومت اپنے شہریوں، خواتین اور بچوں پر عالمی طور پر ممنوعہ قرار دیے گئے کیمیائی ہتھیاروں کو استعمال کررہی ہے یہ گھناؤنا عمل ان کارروائیوں کا تسلسل ہے جو شامی حکومت گزشتہ کئی برس سے اپنے شہریوں کے ساتھ کررہی ہے۔
بحرین

بحرین کی وزارت خارجہ نے بیان جاری کیا ہے کہ شامی شہریوں کے تحفظ اور کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کی روک تھام کے خلاف فوجی آپریشن ضروری تھا۔
یہ پڑھیں: امریکا، برطانیہ اور فرانس نے شام پر حملہ کردیا
دریں اثنا نیٹو کے سیکریٹری جنرل جینز اسٹولن برگ نے شام پر حملے کی حمایت کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ بشارالاسد حکومت کی کیمیائی تنصیبات اور مراکز کے خلاف کارروائی کی حمایت کرتا ہوں، اس کے نتیجے میں شامی حکومت کی اپنے عوام کے خلاف کیمیائی ہتھیار استعمال کرنے کی صلاحیت کو نقصان پہنچے گا۔
The post سعودی عرب، ترکی اور اسرائیل نے شام پر حملے کی حمایت کردی appeared first on ایکسپریس اردو.