28

خاتون کے چہرے کے اندر رینگنے والا طفیلی کیڑا

ماسکو: ایک روسی خاتون کے چہرے پر جگہ بدلنے والا ابھار یا دانہ بن گیا انکشاف ہوا کہ وہ ابھار ایک کیڑا ہے جسے ڈاکٹروں نے آپریشن کرکے نکال دیا۔
نیو انگلینڈ جرنل آف میڈیسن میں شائع ہونے والی خبر کے مطابق 32 سالہ روسی خاتون کی ناک، آنکھ، ماتھے اور ہونٹ پر وقفے وقفے سے پیدا ہونے والے ابھار نے پریشانی میں مبتلا کیے رکھا تھا۔ ماہرین طب کسی نتیجے پر نہیں پہنچ پا رہے تھے۔ بالآخر خاتون نے ایک ماہر چشم سے رجوع کیا جنہوں نے انکشاف کیا کہ آنکھ پر موجود لکیر کی طرح کا ابھار کوئی بیماری نہیں بلکہ ایک زندہ طفیلی کیڑا ہے۔

خاتون نے بتایا کہ چہرے پر پیدا ہونے والا یہ ابھار اپنا مقام تبدیل کرتا رہتا تھا اس وقت سے ظاہر ہو رہا تھا کہ جب ایک نواحی علاقے میں قیام کے دوران خاتون کو مچھروں کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ ماہرین طب نے خاتون کی آنکھ سے رینگتے ہوئے ہونٹ پر ٹھہر جانے والے طفیلی کیڑے کو کامیاب آپریشن کر کے نکال دیا۔ یہ ایک لمبے دھاگے کی شکل کا طفیلیا کیچوا (Dirofilaria) تھا۔ جو مچھر سے انسان میں منتقل ہوسکتا ہے۔

ماہرین طب کا کہنا ہے کہ اگر اس طفیلیے کو انسانی جسم سے نہ نکالا جائے تو یہ دو سال تک انسانی جسم میں زندہ رہ سکتا ہے تاہم اس قسم کے واقعات نہایت کم ہیں جس سے بچنے کے لیے احتیاط لازمی ہے۔
The post خاتون کے چہرے کے اندر رینگنے والا طفیلی کیڑا appeared first on ایکسپریس اردو.