65

جیل انتظامیہ کیخلاف قیدیوں نے شکایات کے انبار لگا دیے – ایکسپریس اردو

جیل انتظامیہ کی نااہلی سے 2قیدی فرار ہوئے ،جیل کی صورتحال خراب ہے،جج۔ فوٹو: فائل

جیل انتظامیہ کی نااہلی سے 2قیدی فرار ہوئے ،جیل کی صورتحال خراب ہے،جج۔ فوٹو: فائل

 کراچی: جیل انتظامیہ کے رویے کے خلاف قیدیوں نے شکایات کے انبار لگادیے، مریض قیدیوں کو بھی طبی امداد فراہم کرنا بند کردی۔

احتساب عدالت نے جیل حکام کی جانب سے قیدیوں کے ساتھ ناروا سلوک پر تحریری درخواستیں دائر کرنے کا حکم دیا،منگل کوجیل حکام کی جانب سے بدعنوانی ریفرنس میں نامزد ملزم کلاش خان، زاہد نثاردیگر کواحتساب عدالت کے روبرو پیش کیا تھا۔

اس موقع پر جیل سے لائے گئے قیدیوں نے جیل انتظامیہ کے رویے کے خلاف شکایات کے انبار لگادیے، قیدیوں نے بتایا کہ سینٹرل جیل سے 2قیدیوں کے فرار کے بعد انتظامیہ نے دیگر قیدیوں کی نگرانی سخت کردی، بلاوجہ تشدد کا نشانا بنایا جاتا ہے۔

ملزم کلاش خان اور زاہد نثار نے بیان میں کہا کہ وہ بلڈ پریشر، شوگر اور دیگر مرض میں مبتلا ہیں،اس کے علاوہ دیگر مختلف امراض میں مبتلا قیدیوں کے ساتھ جیل انتظامیہ ناروا سلوک کررہی ہے، کھانے پینے اور واک کرنے میں شدید مشکلات کا سامنا ہے۔

احتساب عدالت کے جج نے ریمارکس میں کہا کہ جیل انتظامیہ کی نااہلی کی وجہ سے 2قیدی فرار ہوئے، عدالت نے ملزمان کو ہدایت کی کہ آپ درخواست دیں، قانون کے مطابق علاج کی سہولت فراہم کرنے کا حکم دیں گے،جج نے ریمارکس دیے کہ ہم نہیں چاہتے، عدالت کے حکم نامے کی وجہ سے جیل کی صورتحال مزید خراب ہو۔ عدالت نے سماعت10جولائی تک ملتوی کردی۔