28

‘تقریر پر کوئی پابندی نہیں، فیصلے پر غلط رپورٹنگ کی گئی’

بینچ میں شامل جسٹس عظمت سعید نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ عدالت کا حکم کچھ اور تھا جب کہ ملک میں ڈھنڈورا کسی اور چیز کا پیٹا گیا، یہ کسی نے باقاعدہ جعلی خبر چلوائی اور عدلیہ پر حملہ کیا گیا۔